Thursday, January 20, 2022

Musibat Se Qabal Hi Nemat Ki Qadr Kijye مصیبت سے قبل ہی نعمت کی قدر کیجئے

 

قبل از مصیبت نعمت کی قدر کیجئے

فرمایا نعمت ایک پرندہ ہے اسے شکر کے پنجڑے میں قید رکھواور جو یہ چاہتا ہے کہ اسے حاصل شدہ نعمت کبھی زائل نہ ہو بلکہ اس میں اضافہ ہوتا رہے تو اسے چاہئیے کہ نعمت کی معرفت حاصل کرے  شیخ سعدی قدس سرہ ٗنے فرمایا ایک بادشاہ عجمی غلام کے ساتھ کشتی میں بیٹھا تھا اس غلام نے اس سے قبل نہ دریا دیکھا تھا نہ کشتی میں بیٹھنے کی نعمت سے آگاہ تھا اس لئے آہ و زاری شروع کر دی بلکہ کانپنے لگا تمام کشتی والے سمجھاتےاور تسلی دلاتے لیکن کسی ایک نہ مانتا بادشاہ بھی پریشان ہوا لیکن کیا کر سکتے تھے جبکہ وہ کسی کی مانتا ہی نہیں تھا ایک سمجھ دار انسان کشتی میں تھا اس نے بادشاہ سے کہا حکم ہو تو میں اسے خاموش کرادوں بادشاہ نے کہا زہے کرم اس نے کہا غلام کو دریا میں پھینک دو جب اسے کشتی سے اٹھا کر دریا میں پھینکا گیا تو اس نے دو چار ڈبکیاں کھائیں  پھر اسے دریا سے نکال کر کشتی کے ایک کونے میں بٹھا دیا گیا پھر تو نہایت سکون اور خاموشی سے بیٹھ گیا بادشاہ حیران ہوا اور اس سمجھدار انسان سے ا س کا ماجرہ پوچھا تو اس نے کہا کہ اس غلام نے اس سے پہلے کبھی غرق ہونے کا دکھ نہیں دیکھا تھا اور نا  ہی وہ کشتی میں بیٹھنے کی نعمت سے باخبر تھا لیکن اب اسے معلوم ہوا کہ دریا میں غرق ہونا کیسا عذاب ہے اور کشتی میں سوار ہونا کیسی نعمت کیوں کہ نعمت کی قدر مصیبت کے بعد ہوتی  لہذا نعمت پر خدا کا شکر لازم ہے اور عطاء پر اس کی اطاعت ضروری   ہر انسان کو ضروری ہے کہ طریق ِ معرفت ِ نعمت میں جد و جہد کرے اس لئے کہ انسان کو اس کے گناہوں کے باوجود  مہلت دینے کا مقصد یہی ہے کہ انسان اپنی خامی و کوتاہی کا تدارک کرے اور وقت رہتے سنبھل جائے تاکہ نعمتِ خدا واندی سے ہمیشہ لطف اندوز ہوتا رہے کون یہ چاہے گا کہ اسے غلام کی طرح دریائے مصیبت میں پہلے غرق کیا جائے پھرجاکے اسے حاصل شدہ نعمت کا احساس ہو لہذا نعمت کے چھن جانے کے خوف سے ہی نعمتِ خداوندی کی قدر پہچاننےکی کوشش کی جائے ۔



Monday, January 17, 2022

Monday, January 10, 2022

Thursday, December 30, 2021

Khair o Barkat Nayi Dukan o Ma خیر و برکت ںئی دکان و مکان (Good luck new shop and house)

 

 الاوفاق۱۱؎

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ اَلْحَمْدُ لِلّٰهِ الَّذِیْۤ اَنْزَلَ عَلٰى عَبْدِهِ الْكِتٰبَ وَ لَمْ یَجْعَلْ لَّهٗ عِوَجًاؕٚ(۱)قَیِّمًا لِّیُنْذِرَ بَاْسًا شَدِیْدًا مِّنْ لَّدُنْهُ وَ یُبَشِّرَ الْمُؤْمِنِیْنَ الَّذِیْنَ یَعْمَلُوْنَ الصّٰلِحٰتِ اَنَّ لَهُمْ اَجْرًا حَسَنًاۙ(۲)مَّاكِثِیْنَ فِیْهِ اَبَدًاۙ(۳)

فضیلت سورہ کہف شریف کی یہ ہے کہ جو شخص قبل نماز جمعہ کے سورہ کہف پڑھے ، وہ دوسرے جمعہ تک بلیات سے محفوظ رہے ،الحمد اللہ الذی انزل علی عبدہ الکتب (الی) قولہ ماکثین فیہ ابدا ان آیات کو اول ماہ میں مٹی کے یا چینی کے برتن پر لکھ کر بارش یا دریا کے پانی سے دھو کر گھر کی چاروں دیواروں پر اس طرح ڈالے کہ پانی زمین پر نہ ٹپکے بہت برکت ہوگی اور کاغذ کے چار ٹکڑوں پر(اس کا نقش) لکھ کر کلہڑ میں رکھ کر چاروں کونوں میں دفن کرنے سے وہ نئےمکان ودُکان آباد رہیں گے،




Wednesday, December 29, 2021

Safar Ka Irada Multawi Ho سفر کا ارادہ ملتوی ہو(Intent to travel postponed)

الاوفاق۱۱؎

 آیت کریمہ

قَالُوْا یٰمُوْسٰۤى اِنَّا لَنْ نَّدْخُلَهَاۤ اَبَدًا مَّا دَامُوْا فِیْهَا فَاذْهَبْ اَنْتَ وَ رَبُّكَ فَقَاتِلَاۤ اِنَّا هٰهُنَا قٰعِدُوْنَ(۲۴) راستے کا ایک پھتر یا اینٹ کا ٹکڑا لے کر پاک کرکے یہ آیت اس کے نام کے ساتھ اس پر لکھ کر ایسے کنویں میں ڈال دے، جس کا پانی سوکھ گیا ہو اور نقش اس آیت کا لکھ کر گھر میں رکھیں، انشا ٔ اللہ تعالٰی وہ سفر کا ارادہ ترک کردے گا ، نقش یہ ہے


Monday, December 27, 2021

Amal Dast e Ghaib o Futooh عمل دست غیب و فتوح (The Ritual Of Hand Of Unseen Help)

 

الاوفاق۱۱؎

 

آیت کریمہ وعندہ مفاتیح الغیب کا یعلمھا (الی) الافی کتٰب مبین عروج ماہ میں یکم تاریخ سے سات تاریخ تک روزہ رکھے اور کلام نہ کرے اور اکثر یا حی یا قیوم ورد رکھے اور گیہوں کی روٹی اور نمک لاہوری کھائے  ساتویں روز بعد نماز عشاءاس آیت کریمہ کو ایک ہزار بار مع بسم اللہ شریف ایک نشت میں پڑھے اول وآخر درود شریف ۱۱۔۱۱ بار درود شریف یہ ہے ۔اللھم صلی علی سید نا محمد وعلی ال سیدنا محمد بعد د کل معلوم لک اور اس عمل کا ثواب حضور پر نور سید عالم ﷺ پھراپنے والدین(اگر باحیات ہیں تو صحت و سلامتی کی دعاء) اور تمام مومنین و مومنات کو پہنچائے ، نیز اپنے پیر و مرشد یا صاحب عمل کی روح کو بھی اگر وفات پاچکے ہوں ورنہ اس کی سلامتی کی دعا کرے اور اگر پڑھنے کے دوران شکل نورانی نظر آئے اور کوئی چیز عطاکرےبااحتیاط اپنے پاس رکھے اور جو کچھ دن بھر حاصل ہو  اسے خرچ کردیا کرےاور اس عمل کو کسی سے نہ بتائے,اس آیت مبارکہ کا نقش ہمیشہ اپنے پاس رکھے

(اجازت اور پرہیز لازمی ہے,فقیرِ قادری کی نگرانی میں اس عمل کو اہل حضرات کر سکتے ہیں)


 

Saturday, December 25, 2021

Roohani Tashkhees Ke 25 Ausool روحانی تشخیص کے پچیس اصول


 

Ayat e Qutub Ayat e Ghaus Ka Nisaab آیت قطب و آیت غوث کا نصاب

 

الاوفاق۱۱؎

قولہ تعالٰی آیت قطب ثم انزل علیکم من بعد الغم (تا) واللہ علیم بذات الصدور اس آیت کو آیت قطب کہتے ہیں اور سورہ فتح کی آخر آیت کو آیت غوث کہتے ہیں۔ یعنی محمد رسول اللہ والذین معہ اشدا ٔ علی الکفار (تا) اجراعظیما

ثُمَّ  اَنْزَلَ  عَلَیْكُمْ  مِّنْۢ  بَعْدِ  الْغَمِّ  اَمَنَةً  نُّعَاسًا  یَّغْشٰى  طَآىٕفَةً  مِّنْكُمْۙ-وَ  طَآىٕفَةٌ  قَدْ  اَهَمَّتْهُمْ  اَنْفُسُهُمْ  یَظُنُّوْنَ  بِاللّٰهِ  غَیْرَ  الْحَقِّ  ظَنَّ  الْجَاهِلِیَّةِؕ-یَقُوْلُوْنَ  هَلْ  لَّنَا  مِنَ  الْاَمْرِ  مِنْ  شَیْءٍؕ-قُلْ  اِنَّ  الْاَمْرَ  كُلَّهٗ  لِلّٰهِؕ-یُخْفُوْنَ  فِیْۤ  اَنْفُسِهِمْ  مَّا  لَا  یُبْدُوْنَ  لَكَؕ-یَقُوْلُوْنَ  لَوْ  كَانَ  لَنَا  مِنَ  الْاَمْرِ  شَیْءٌ  مَّا  قُتِلْنَا  هٰهُنَاؕ-قُلْ  لَّوْ  كُنْتُمْ  فِیْ  بُیُوْتِكُمْ  لَبَرَزَ  الَّذِیْنَ  كُتِبَ  عَلَیْهِمُ  الْقَتْلُ  اِلٰى  مَضَاجِعِهِمْۚ-وَ  لِیَبْتَلِیَ  اللّٰهُ  مَا  فِیْ  صُدُوْرِكُمْ  وَ  لِیُمَحِّصَ   مَا  فِیْ  قُلُوْبِكُمْؕ-وَ  اللّٰهُ  عَلِیْمٌۢ  بِذَاتِ  الصُّدُوْرِ(۱۵۴) مُحَمَّدٌ رَّسُوْلُ اللّٰهِؕ-وَ الَّذِیْنَ مَعَهٗۤ اَشِدَّآءُ عَلَى الْكُفَّارِ رُحَمَآءُ بَیْنَهُمْ تَرٰىهُمْ رُكَّعًا سُجَّدًا یَّبْتَغُوْنَ فَضْلًا مِّنَ اللّٰهِ وَ رِضْوَانًا٘-سِیْمَاهُمْ فِیْ وُجُوْهِهِمْ مِّنْ اَثَرِ السُّجُوْدِؕ-ذٰلِكَ مَثَلُهُمْ فِی التَّوْرٰىةِ ﳝ- وَ مَثَلُهُمْ فِی الْاِنْجِیْلِ ﱠ كَزَرْعٍ اَخْرَ جَ شَطْــٴَـهٗ فَاٰزَرَهٗ فَاسْتَغْلَظَ فَاسْتَوٰى عَلٰى سُوْقِهٖ یُعْجِبُ الزُّرَّاعَ لِیَغِیْظَ بِهِمُ الْكُفَّارَؕ-وَعَدَ اللّٰهُ الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا وَ عَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ مِنْهُمْ مَّغْفِرَةً وَّ اَجْرًا عَظِیْمًا۠

ان دونوں آیتوں میں سب حروف تہجی جمع ہوگئے ہیں اور اس کے برکات بہت زیادہ ہیں اس آیت کا نصاب اکتالس بار ہے سات دن میں اور آخری دن پانچ بار پڑھے ۔مگر اس کے پڑھنے کے لئے استخارہ نبویہ(اور اجازت) شرط ہے۔لہذا پہلے استخارہ کرے اگر اثبات میں جواب ملے تو عمل کرے اور ترتیب پڑھنے کی یہ ہےکہ وضو تازہ کرکے خوشبو جلا کر دو رکعت نماز پڑھے اور ہر رکعت میں بعد فاتحہ آیت الکرسی ایک ایک بار پڑھے بعد سلام سو بار درود شریف پڑھ کر آیت قطب و آیت غوث چھ چھ بار پڑھےاور مقصد کا دل میں خیال لائےاس کے بعدیا زَاکِیَ الطَّاھِرُ مِن کُلِّ اٰفَۃٍ بِقُدْسِہٖ یَازَاکِی ایک سو بار پڑھ کر مطلب کی دعا کرےاسی طرح چھ روز پڑھے اور ساتویں دن پانچ بار پڑھے وضو کے بعد سے کسی سے کلام نہ کریں(جن احباب نے  آیت قطب کی زکات فقیر کی نگرانی میں ادا کی ہے وہ اس طریقے سے کسی بھی مقصد کے لئے پڑھ سکتے ہیں اللہ تعالی برکت فرمائےآمین)

 

Salatul Mushahidah صلاۃ المشاہدہ


 

Thursday, December 23, 2021

Jang Me Shikast Na Ho جنگ میں شکست نہ ہو (To Don't Be Defeated In War)

الاوفاق۱۱؎

سورہ بقرسورہ آل عمران سورہ نسا سورہ مائدہ میں چار آیتیں ہیں ہر ایک دس دس قاف پر مشتمل ہیں ان کو علم (جھنڈے) پر لکھ کر علم کو لشکر میں سامنے رکھے، شکست نہ ہو,اسی طرح جس مقام پر دشمنوں کا خوف ہو یا  دشمنوں پر غالب رہنے کے لئے بھی لکھ سکتے ہیں فقیرِ قادری نے ان آیتوں کو نقش مثمن میں پر کر دیا ہےشرفِ مریخ یا کسی سعد وقت میں لکھا جائے، وہ آیتیں یہ ہیں

 الم ترالی الملا من بنی اسرائیل (الی) واللہ علیم بالظلمین  دوم آل عمران میں لقدسمع اللہ قول الذین قالو( الی) عذاب الحریق سوم نسا ٔ میں الم ترالی الذین قیل لھم کفوایدیھمواقیمو الصلاۃ واتواالزکٰوۃ (الی) ولا تظلمون فتیلا چہارم سورہؔ مائدہ میں واتل علیھم نبا ابنی آدم بالحق (الی) من المتقین۔

اَلَمْ تَرَ اِلَى الْمَلَاِ مِنْۢ بَنِیْۤ اِسْرَآءِیْلَ مِنْۢ بَعْدِ مُوْسٰىۘ-اِذْ قَالُوْا لِنَبِیٍّ لَّهُمُ ابْعَثْ لَنَا مَلِكًا نُّقَاتِلْ فِیْ سَبِیْلِ اللّٰهِؕ-قَالَ هَلْ عَسَیْتُمْ اِنْ كُتِبَ عَلَیْكُمُ الْقِتَالُ اَلَّا تُقَاتِلُوْاؕ-قَالُوْا وَ مَا لَنَاۤ اَلَّا نُقَاتِلَ فِیْ سَبِیْلِ اللّٰهِ وَ قَدْ اُخْرِجْنَا مِنْ دِیَارِنَا وَ اَبْنَآىٕنَاؕ-فَلَمَّا كُتِبَ عَلَیْهِمُ الْقِتَالُ تَوَلَّوْا اِلَّا قَلِیْلًا مِّنْهُمْؕ-وَ اللّٰهُ عَلِیْمٌۢ بِالظّٰلِمِیْنَ(۲۴۶)

لَقَدْ سَمِعَ اللّٰهُ قَوْلَ الَّذِیْنَ قَالُوْۤا اِنَّ اللّٰهَ فَقِیْرٌ وَّ نَحْنُ اَغْنِیَآءُۘسَنَكْتُبُ  مَا  قَالُوْا  وَ  قَتْلَهُمُ  الْاَنْۢبِیَآءَ  بِغَیْرِ  حَقٍّۙ-وَّ  نَقُوْلُ  ذُوْقُوْا  عَذَابَ  الْحَرِیْقِ(۱۸۱)

اَلَمْ تَرَ اِلَى الَّذِیْنَ قِیْلَ لَهُمْ كُفُّوْۤا اَیْدِیَكُمْ وَ اَقِیْمُوا الصَّلٰوةَ وَ اٰتُوا الزَّكٰوةَۚ-فَلَمَّا كُتِبَ عَلَیْهِمُ الْقِتَالُ اِذَا فَرِیْقٌ مِّنْهُمْ یَخْشَوْنَ النَّاسَ كَخَشْیَةِ اللّٰهِ اَوْ اَشَدَّ خَشْیَةًۚ-وَ قَالُوْا رَبَّنَا لِمَ كَتَبْتَ عَلَیْنَا الْقِتَالَۚ-لَوْ لَاۤ اَخَّرْتَنَاۤ اِلٰۤى اَجَلٍ قَرِیْبٍؕ-قُلْ مَتَاعُ الدُّنْیَا قَلِیْلٌۚ-وَ الْاٰخِرَةُ خَیْرٌ لِّمَنِ اتَّقٰى- وَ لَاتُظْلَمُوْنَفَتِیْلًا(۷۷)